کینیڈا میں دو ارب سال پرانا پانی دریافت

ٹورانٹو۔ کینیڈا( وقار احمد) کینیڈا میں سائنسدانوں نے زمین پر موجود قدیم تریم پانی کی ذخائردریافت کئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کینیڈا کی مشہور یونیورسٹی ٓاف ٹورانٹو کےمحققین کو صوبے انٹاریو کے دور درازشمالی شہر ٹمنز میں واقع ایک کان کی گہرائی میں دنیا کے قدیم ترین پانی کے ذخائر ملے ہیں ۔ یہ پانی دو بلین سال گزر جانے کے باوجود پینے کےقابل ہے۔

 تحقیقی ٹیم کے سربراہ ٓالیور وار نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے بتایا کہ ” یہ پانی پینے کے قابل ہے مگر میں تجویز نہیں کروں گا۔ کیونکہ اس میں سوڈیم  کی مقدارعام پانی کی نسبت ٓاٹھ گنا زیادہ ہے۔ اس کے علاوہ اس میں دھاتی ذرات کی بے شمار اقسام بھی پائی گئی ہیں ۔”

سن دوہزار تیرہ میں اس ٹیم نے اسی کان سے ایک بلین سال سے زائد عرصہ پرانے پانی کے ذخائر دریافت کئے تھے۔ مگر حالیہ نمونوں نے پانی کے دو بلین سال پرانے ہونے کے ثبوت دئیے ہیں۔

اس تحقیق کے نتیجے میں زمین کے بننے اور اس پر زندگی کے ابتدائی ادوار کے بارے میں معلوم کرنے میں ٓاسانی پیدا ہوگی ۔ 

الیور وار  نے مزید کہا کہ زمین پر پانی کی اتنی پرانی موجودگی ایک اہم بات ہے۔ 

 

کینیڈا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *